Anokhi Jeet by Huma Waqas

Posted on

Anokhi Jeet by Huma Waqas complete Urdu novel based on social issues, age differences, cousin marriage, romantic, family system-based, kidnapping-based, funny, contract marriage, forced marriage, army-based novels, etc.

Dive into the Depths of Emotion and Discovery with ‘Anokhi Jeet’ by Huma Waqas: A Tale of Love, Identity, and the Journey Within.

Anokhi Jeet by Huma Waqas Complete Urdu Novel

ردا جو موباٸل میں مصروف تھی اس کی انگلیوں کی جنبش کو دیکھ کر ایکدم سے سر اٹھا کر اس کی طرف متوجہ ہوٸ ۔ آج تین دن بعد وہ موحد کو ارحم کے بھاڑے کے غنڈوں کی مدد سے اغوا کرنے میں کامیاب ہو گٸ تھی اور اب موحد کو ارحم کے فارم ہاٶس میں ہی رکھا ہوا تھا ۔ موحد کی آنکھ کھلی تو کرسی پر بیٹھا رسیوں میں جکڑا ہوا تھا سر بھاری ہو رہا تھا بمشکل حواس بحال ہوۓ تو سامنے کا منظر دیکھ کر حلق تک کڑوا ہو گیا ۔

سامنے ردا بیٹھی تھی اور اس کے ہوش میں آنے پر اب مسکراتے ہوۓ دلچسپی سے اسے دیکھ رہی تھی۔ موحد نے دانت پیستے ہوۓ ارد گرد کا جاٸزہ لیا واٸٹ ٹاٸیلز والا فرنشڈ کمرہ تھا پھر غصے سے سامنے بیٹھی ردا کی طرف دیکھا ، دماغ ابھی بھی قبول نہیں کر پا رہا تھا کہ یہ سب ہو کیا رہا ہے اس کے ساتھ ۔ ” یہ کیا بدتمیزی ہے بھٸ کھولو مجھے کیوں باندھ رکھا ہے “ موحد نے گھور کر اپنے سامنے پرسکون بیٹھی ردا کو دیکھا

جو اپنے گھنگرالے بالوں کی لٹ کو پکڑ پکڑ کر کھینچ رہی تھی اور لٹ سیدھی ہو کر چھوڑنے پر سپرنگ کی طرح واپس جا رہی تھی۔ وہ ایک ہاتھ میں لوڈیڈ گن پکڑے ہوۓ تھی ، جسے بار بار گھما کر آنکھوں کے آگے لا رہی تھی۔ چیونگم کو چباتے ہوۓ وہ بے نیازی سے کھڑی ہوٸ ، لب جن پر فاتحانہ مسکراہٹ سجی تھی بار بار چیونگم کا غبارہ بنا کر پھوڑ رہے تھے ۔

” نکاح ہو جانے دو ہمارا پھر کھول دوں گی تمہیں “ ردا نے گن کو اس کے گردن کے نیچے رکھ کر اس کے چہرے کو اوپر کرتے ہوۓ کہا ۔ موحد کے تو جیسے ہاتھوں کے طوطے اڑ گۓ ، سر کو زور سے ہلایا ایسے جیسے خواب سے جاگنے کی سعی کر رہا ہو ، پر یہ خواب نہیں حقیقت تھی وہ سامنے کھڑی تھی اس کے ۔ ”میں ہر گز نکاح نہیں کروں گا تمھارے ساتھ ، کیا بے ہودگی ہے یہ کھولو مجھے فوراً ، اب تمھارا ملازم نہیں ہوں میں “ موحد نے غصے سے گھور کر دیکھتے ہوۓ ناگواری سے کہا

جس پر وہ اب کھلکھلا کر ہنس پڑی۔ ” نکاح تو ہو گا اور آج ہی ہو گا ہمارا “ ردا نے اس کے بال پکڑ کر اتنی زور سے کھینچے کہ موحد کی بے ساختہ آہ نکلی۔ ظالم تو تھی ہی وہ ، پر آج تو ڈاکو رانی جیسا روپ دھارے ہوۓ تھی ۔ ” پاگل ہو گٸ ہو کیا تم ، نکاح ماٸ فٹ میں تو تمہیں دیکھنا تک نہیں چاہتا “ موحد نے حقارت سے جواب دیا ۔

” ٹھیک ہے پھر مرنے کے لیے تیار ہو جاٶ کیونکہ نفرت تو میں بھی تم سے اتنی ہی کرتی ہوں جتنی تم مجھ سے ، ویسے بھی سب کے لیے تو تم ملتان کے لیے نکل چکے ہو ، جاب تم چھوڑ چکے ہو ، کسی کو کیا پتا چلے گا میں نے قتل کر دیا تمھارا “ ردا نے گن کو گھماتے ہوۓ مزے سے جواب دیا ۔ ” ڈرانا کسی اور کو تم اور قتل۔۔۔ یہ نہیں کر سکتی تم ، کھولو مجھے جنگلی بھینس “ موحد نے پوری قوت بازوٶں پر لگاتے ہوۓ غصے سے کہا ۔

Anokhi Jeet by Huma Waqasin Pdf

Anokhi Jeet by Huma Waqas

Anokhi Jeet by Huma Waqas In Pdf Form

ناول کا پی ڈی ایف ڈاؤن لوڈکرنے کے لیے ڈاؤن لوڈ کے بٹن پرکلک کریں

👇

DIRECT Download LINK

or

ناول کوپڑھنے کے لیےیہا ں کلک کریں

👇

Other novels by this writer are

Bhuchak Afsana by Huma Waqas

Kali Afsana by Huma Waqas

Charag e Sham se Pehle Novel by Huma Waqas

Basil Novel by Huma Waqas

Husna Novel by Huma Waqas

Deed e Qalb novel by Huma Waqas

Harman Naseeb na thy novel by Huma Waqas

Maqsoon novel by Huma Waqas

Butter Scotch novel by Huma Waqas

Ishq ho to Aisa novel by Huma Waqas

Ajab Bandhan novel by Huma Waqas

Jurm e Tamana novel by Huma Waqas

Novel Galaxy is a world of Urdu novels based on social issues, rude heroes novels, Urdu revenge base novels, Urdu E-book, Urdu digest, Urdu horror and thriller novels, etc. All novels are also available online and in PDF form.

Top Categories of Urdu Novels 

 Here, you will find a list of Urdu novels from all categories that can easily be downloaded in PDF format and saved into your devices/mobile with just one click.

You might also like these NOVELS

Leave a Comment