Be Dard Piya By Umme Hani

Posted on

Be Dard Piya By Umme Hani complete Urdu novel based on social issues, age differences, cousin marriage, romantic, family system-based, kidnapping-based, funny, contract marriage, forced marriage, army-based books, etc.

اس روز بھی مصطفی معمول کے مطابق دفتر سے واپس آ کر فریش ہو کر صوفے کی بیک سے سر ٹکائے بیٹھا تھا جب اسے کمرے کے دروازے کے کھلنے کی آواز آئی وہ نظر انداز کئے ویسے ہی بیٹھا رہا۔۔۔۔۔ جب کچھ پلوں کے بعد اسے اپنی گود میں کسی نازک چیز کا احساس ہوا۔۔۔۔

مصطفی نے ایک جھٹکے سر اٹھا کر دیکھا۔۔۔۔ سامنے ہی گھٹنوں کے بل بیٹھی ندا اسکی گود میں چہرا چھپائے سسک رہی تھی۔۔۔۔ وہ جہاں کا تہاں رہ گیا۔۔۔۔ بھلا اس سے پہلے ایسا کب ہوا تھا۔۔۔۔۔ ندا اور وہ بھی خود اس تک چل کے آتی۔۔۔۔ اسنے اپنا کانپتا ہاتھ اٹھا کر ندا کے سر پر رکھا۔۔۔۔ مصطفی پلیز مجھے معاف کر دیں خدا کے لئے مجھے معاف کر دیں۔۔۔

میری ہر اس غلطی کے لیےکر دیں۔۔۔۔ میری ہر اس غلطی یا جرم کے لئے جو مجھے سے سرزد ہوئے یا نہیں ہوئے۔۔۔ ” مجھے یہ ہی سمجھ نہیں آیا کہ آخر میرا قصور کیا تھا جو ابھی تک میرے ساتھ ایسا ہوتا رہا۔۔۔۔۔ ہچکیوں سے روتے بات کرتے ہوئے اس نے سر مصطفی کی گود سے اٹھا کر مصطفی کی طرف دیکھا۔۔۔ اور مصطفی اسے دیکھ کر ایک دم فریز ہو گیا

کیونکہ کہ یہ وہ ندا تو نہ تھی جیسے وہ جانتا تھا بلکہ یہ تو کوئی اور ہی صدیوں کی بیمار ہڈیوں کا ڈھانچہ تھی۔۔۔۔ پر اب آپ مجھے معاف کر دیں۔۔۔۔۔ مجھ سے مزید برداشت نہیں ہوتا مجھے لگتا ہے کہ اب میرا دل پھٹ جائے گا۔۔۔۔۔ میرے لئے اتنی اذیت ناک موت تجویز مت کریں مصطفی۔۔۔۔ مجھے آسان موت دے دیں خدا کے لئے۔۔۔۔ روتے روتے اس نے مصطفی کے سامنے ہاتھ جوڑ دیئے تھے رونے سے سے اسکے سارے جسم پر لرزہ طاری ہو گیا تھا۔۔۔۔

یہ منظر دیکھ کر مصطفی کے دل پر بھرچیاں چل گئیں تھیں۔۔۔۔۔۔۔ اس نے جلدی سے ندا کے کانپتے بدن کو اپنی بازوں میں سمیٹا اور اپنے برابر صوفے پر بیٹھا کر اسے خود میں بھینچ لیا۔۔۔۔ کندھا میسر آنے پر تو وہ یوں ٹوٹ کر بکھری کہ جیسے سارے آنسو آج ہی بہا دے گی۔۔۔۔ میں کیا کروں مصطفی۔۔۔۔ مجھے میرا بیٹا نہیں بھولتا۔۔۔۔ میں نے اسے بھولنے کی اس پر صبر کرنے کی بہت کوشش کی۔۔۔۔ پر وہ میرے تخیل سے جاتا ہی نہیں۔۔۔۔

وہ کیسا ہوگا مصطفی کیسے اپنے ننھے ننھے ہاتھ ہلاتا ہوگا ۔۔۔ اسکی مسکراہٹ کیسی ہوگی۔۔۔۔ وہ روتا ہوا کیسا لگتا ہوگا مصطفی ۔۔۔۔ یہ سب کچھ مجھے سکون لینے نہیں دیتا مصطفی ۔۔۔۔ میں کیا کروں۔۔۔ وہ ابھ ی بھی بلک رہی تھی۔۔۔ اور مصطفی کا اپنا ضبط بس یہیں تک تھا۔۔۔۔ اس بار اسنے اپنی آنکھ وں سے نکلنے والے آنسوں کو روکا نہ تھا بلکہ وہ بہت پھرتی سے مصطفی کی آنکھوں سے نکل کر ندا کے بالوں میں جذب ہو رہے تھے۔۔۔۔

ہو سکے تو مجھے معاف کر دینا ندا میں جانتا ہوں کہ میں نے تمہارے ساتھ زیادتی نہیں ظلم کیا ہر۔۔۔۔ وہ ندا کا چہرا اپنے ہاتھوں میں تھامے اسکے ماتھے سے اپنا ماتھا ٹکرائے بول رہا تھا۔۔۔۔ دونوں نے کے چہرے آنسوں سے تر تھے۔۔۔۔ دونوں ہی ایک لمبی مسافت طے کر کے آئے تھے۔۔۔۔۔۔

پر خدا کی قسم بہت مجبور ہوں میں ندا۔۔۔۔ میری ماں اپنا ایک خوبرو بیٹا کھو چکی ہے۔۔۔۔ انکی تمام امیدوں کا مرکز میں ہوں۔۔۔ اور اگر میری وجہ سے نجمہ آپی کا گھر تباہ ہو جاتا تو امی شائید سہہ نہ پاتی۔۔۔ میں نہیں جانتا میرا فیصلہ درست تھا یا نہیں پر میں نے یہ فیصلہ بہت مشکل سے کیا ہے۔۔۔۔ میرا خدا گواہ ہے کہ تمہیں اذیت دے کر خوش میں بھی نہیں رہا ہوں۔۔۔۔

Dive into the Depths of Emotion and Discovery with ‘Be Dard Piya’ By Umme Hani: A Tale of Love, Identity, and the Life Journey Within.

Be Dard Piya By Umme Hani in Pdf

Be Dard Piya By Umme Hani

ناول کا پی ڈی ایف ڈاؤن لوڈکرنے کے لیے ڈاؤن لوڈ کے بٹن پرکلک کریں

👇

or

ناول کوپڑھنے کے لیےیہا ں کلک کریں

👇

Novel Galaxy is a world of Urdu novels based on social issues, rude heroes novels, Urdu revenge base novels, Urdu E-book, Urdu digest, Urdu horror and thriller novels, etc. All novels are also available online and in PDF form.

Top Categories of Urdu Novels 

 Here, you will find a list of Urdu novels from all categories that can easily be downloaded in PDF format and saved into your devices/mobile with just one click.

There’s no content to show here yet.

You might also like these NOVELS

Leave a Comment