Diyar E Dil By Rabia Bukhari

Posted on

Diyar E Dil By Rabia Bukhari complete Urdu novel based on social issues, age differences, cousin marriage, romantic, family system-based, kidnapping-based, funny, contract marriage, forced marriage, army-based books, etc.

آہل جو پہلے ہی خان بابا کی باتوں سے پریشان آیا تھا اب منہاء کی منگنی کا سن کر وہ جل بھن سا گیا کہ اپنی کرسی پر بیٹھنے کی بجائے وہ پورے کمرے کی چکر کاٹنے لگا۔۔۔۔ “مے آئی کمنگ سر!!!؟؟؟” منہاء جو خود بھی ڈر رہی تھی حوصلہ کرتے دستک دیتے گو ہوئی۔۔۔ “یس کمنگ!!!!” آہل نے منہاء کی آواز سنی تو خود کو نارمل کرتے واپس اپنی کرسی پر ٹھاٹ جمائے بیٹھ گیا۔۔۔ منہاء آہل کی آواز سنتے ہی ڈرے سہمے قدموں سے اندر کی جانب بڑھی اور نظریں گرائے سیدھا آہل کے روبرو جا بیٹھی۔۔۔

۔۔ جو دروازے سے کرسی تک منہاء کو اپنی نظروں کے حصار لیے گھور رہا تھا۔۔۔ “سر وہ میں!!!!!” منہاء بمشکل لفظوں کو سمیٹتے بولی۔۔۔ “جی مس منہاء میں سن رہا ہو آپ بولیے کیا کہنا چاہے گی اپنی صفائی میں؟؟؟؟” آہل زچ ہوئے سرد ہوا۔۔۔۔۔ “جی سر وہ میں !!!” منہاء کیلئے آہل کی نظروں کا سامنا کرنا کسی عذاب سے کم نہ تھا مگر ناز بی کے بھروسے نے اسے حوصلہ دیے رکھا۔۔۔۔ “میں بس معافی مانگنا چاہتی ہو۔۔۔ جو بھی کل رات ہوا وہ نہیں ہونا چاہیے تھا۔۔۔۔ مجھے وہاں نہیں آنا چاہیے تھا اور وہ سب نہیں کہنا چاہیے تھا۔۔۔۔

” منہاء کی زبان کہتے لڑکھڑا سی گئی۔۔۔ “کیا کیا کہا آپ نے؟؟؟؟” آہل نے منہاء کو یوں سر گرائے دیکھا تو طنزیہ اور فخریہ لہجے سے سیدھا ہوتے کرسی پر سنگین مسکراہٹ سجائے بولا۔۔۔ “مجھے سنائی نہیں دیا!!!! مجھے لگا جیسے میں نے کچھ غلط سنا ہے۔۔۔ کیا آپ پلیز دوبارہ دہرائی گی اپنی بات کو۔۔۔ مس منہاء!!!” آہل لفظ چبائے گو ہوا۔۔۔۔ “سر وہ میں معافی!!!’ منہاء جو آہل کی چالاکی سمجھ چکی تھی بے بسی سے بولی ۔۔۔۔۔۔

“اوہ!!! تو آپ شرمندہ ہیں!!!! مجھے لگا میں نے شاید کچھ غلط!!!!!” آہل اپنی کرسی سے اٹھتے طنزیہ قہقہ آور ہوا۔۔ “مطلب مس منہاء منور جنھوں نے نام بدلنے کی قسم کھائی تھی آج میرے ہی ساتھ شرمندہ ہے۔۔۔۔ آئی لوو اٹ!!!” آہل ہنس رہا تھا جبکہ منہاء بناء کچھ کہے سر گرائے خاموش رہی۔۔۔۔ “معافی آپ نے مانگی۔۔۔ اپکا بنتا تھا۔۔۔ مگر معاف میں کرو یہ تو لازم نہیں ناں!!!!” آہل میز پر جھکتے منہاء کو دیکھتے ہنسا۔۔۔۔ “سر میں سچ میں شرمندہ ہو۔۔۔۔ آپ چاہے تو میں آپ کے دادا کے سامنے بھی معافی مانگ سکتی ہو۔۔۔ مگر میری وجہ سے ثمر کو سزا مت دے۔۔۔ وہ بے قصور ہے بس میری نادانی اور ناسمجھی کی وجہ سے پھنستی۔چلی گئی۔۔۔

اور میرے ساتھ کی وجہ سے پھنستی گئی۔۔۔” منہاء مبہم ہوئی۔۔۔ جبکہ آہل کو اس بپھڑی شیرنی کی دم پر پاؤں رکھنے میں بہت مزہ آرہا تھا۔۔۔۔ ”تو آپ سچ میں ان کے سامنے مجھ سے معافی مانگنے کو تیار ہے؟؟؟؟ اوہ واؤ۔۔۔۔۔ کل۔مجھے لڑکارنے والی آج اپنی ہار تسلیم کرتی ہے۔۔۔۔ گریٹ!!!” آہل مسکرایا۔۔۔ “جی سر میں تیار ہو!!!! کیونکہ میری امی نے کہا جو کام سکون اور آرام سے ہوسکتا اسے اسی طرح۔۔۔۔ اور میں وہی کرنے کی کوشش میں. ہو۔۔۔۔” منہاء نے سنا تو تاسف ہوئی۔۔۔۔ “ہمممم۔۔۔ یہ تو بہت اچھی بات ہے پھر۔۔۔ چلے اس وجہ سے میں ثمر کے ڈاکومنٹس واپس کر دیتا ہو۔۔۔۔

” آہل مزے سے کرسی پر بیٹھتے سوچتے گو ہوا۔۔۔ جسے سنتے ہی منہاء کے چہرے پر اطمینان سا چھلکا۔۔۔ “مگر!!!!!” آہل جو اب کچھ اخیر سوچ چکا تھا منہاء کا سکون ایک دم اڑ سا گیا۔۔۔۔ “مگر کیا سر؟؟؟؟” “اپکو اس آفس میں جاب کرنی ہو۔۔۔۔ اور وہ تب تک جب تک میں چاہو گا۔۔۔۔ اگر منظور ہے تو بتائیے ورنہ ثمر کے ڈاکومنٹس بھی بھول۔جائیے۔۔۔۔” آہل نے اپنا آخری پتہ پھینکا جس کو دیکھتے ہی منہاء ہکا بکا نظروں سے اسے دیکھنے لگی۔۔۔۔

“یہ کیا؟؟؟ میرا مطلب جاب؟؟؟؟” منہاء ششدر نظروں سے دیکھتے ہکلائی۔۔۔۔۔ “یہ اپکی مرضی ہے۔۔۔۔ کیونکہ میں نے جو کہنا تھا کہہ دیا۔۔۔ آپ چاہے تو مجھے کل تک جواب دے سکتی ہے۔۔۔ مگر اس سے زیادہ مجھ سے امید مت رکھیں۔۔۔ تو اب آپ جا سکتی ہے وہ ہے دروازہ۔۔۔۔” آہل نے منہاء کی پریشانی دیکھی تو مزے لیتے دروازے کی جانب اشارہ دیا۔۔۔ جس پر منہاء حواس باختگی سے کچھ سوچتے اٹھی اور بناء کچھ کہے وہاں سے نکل پڑی۔۔۔ جبکہ منہاء کو یوں پہلی بار زیر کرنے پر آہل خوشی سے نہال کرسی پر جھوم سا گیا تھا۔۔۔ اور پھر فاتحانہ مسکراہٹ لیے واپس اپنے کام کی جانب متوجہ ہوا۔۔

Dive into the Depths of Emotion and Discovery with ‘Diyar E Dil’ By Rabia Bukhari: A Tale of Love, Identity, and the Life Journey Within.

Diyar E Dil By Rabia Bukhari in Pdf

Diyar E Dil By Rabia Bukhari

ناول کا پی ڈی ایف ڈاؤن لوڈکرنے کے لیے ڈاؤن لوڈ کے بٹن پرکلک کریں

👇

or

ناول کوپڑھنے کے لیےیہا ں کلک کریں

👇

Novel Galaxy is a world of Urdu novels based on social issues, rude heroes novels, Urdu revenge base novels, Urdu E-book, Urdu digest, Urdu horror and thriller novels, etc. All novels are also available online and in PDF form.

Top Categories of Urdu Novels 

 Here, you will find a list of Urdu novels from all categories that can easily be downloaded in PDF format and saved into your devices/mobile with just one click.

You might also like these NOVELS

Leave a Comment