Hum Asman Kay Log Hein By Zaid Zulfiqar Season 1

Posted on

Hum Asman Kay Log Hein By Zaid Zulfiqar Season 1 complete Urdu novel based on social issues, age differences, cousin marriage, romantic, family system-based, kidnapping-based, funny, contract marriage, forced marriage, army-based books, etc.

اماں کی ہمیشہ سے یہی عادت رہی تھی۔ تہجد کے وقت اٹھتی تھیں اور وہیں بڑے آنگن کی دیوار کے ساتھ، دھنئیے پودینے کی کیاری کے بغل میں جاۓ نماز بچھا کر اپنی مناجات کرتی رہتی تھیں۔ کب فجر ہوئی، کب قضا، سارا حساب وہیں بیٹھے بیٹھے رکھتی تھیں۔ کون جاگا کون نہیں، ساروں کے کچے چٹھے بھی انکے علم میں ہوتے تھے۔ ” کبھی سے آوازیں دے رہی ہوں ۔۔۔

ایک ایک کے ہاتھ کہلا بھیجا کہ اٹھ جاؤ۔۔۔۔ بانگیں بھی کب کی چُپکی ہو گئی، تم اللّٰہ ماریوں کے ہوش ہی نہیں ملتے۔۔۔۔ اب اٹھی ہو جب وقت نکل گیا۔۔۔۔ یہ نا دیکھو گی کہ پڑھنی ہے کہ نہیں، جا کھڑی ہوں گی جاۓ نمازوں پہ ۔۔۔۔ اُسکی عبادت کوئی ہنسی ٹھٹھہ ہے کیا۔۔۔۔۔ ” وہ روشنی سے وقت کا علم نکالتی تھیں۔ کتنی روشنی ہوگی تو کیا وقت ہوا ہوگا۔

ادھر سورج کی کرنیں انکی کھینچی، ان دیکھی قطار کے پار ہوئیں، اُدھر انہوں نے اشراق کی نیت باندھی۔ اسکے بعد وہ دنیا کے کاموں کی خبر لیتی تھیں۔ بڑی پرات میں اِتا سارا آٹا لیکر گوندھتیں، دودھ کو ابال دینے کی خاطر چولہے پہ چڑھاتیں، تندور کے لئیے بالن اکٹھا کرتیں اور اسے تاپنے کا حیلہ کرتیں۔ یہ سب وہ جانے کب سے کر رہی تھیں۔ شائد اس گھر کے ہر ہر بچے کے ہوش سنبھالنے سے وہ اس فرض پہ معمور تھیں جو ان پہ فرض تھا بھی کہ نہیں، معلوم نہیں۔

اس صبح بھی ابھی سویرا طلوع بھی نا ہوا تھا جب اس آہٹ پہ انہوں نے حیرانی سے سر اٹھایا۔ تہمینہ نلکے کے پاس کھڑی بازو کہنیوں تک موڑے، سر پہ ڈوپٹہ درست کر رہی تھی۔ ” آج جانے سورج مشرق سے ہی طلوع ہوگا کہ مغرب سے۔۔۔ اگر جو آج ہی حساب کا دن ہوا تو ۔۔۔۔ اللّٰہ میری توبہ۔۔۔۔ ” وہ تسبیح بھول گئیں۔ وضو بنا کر وہ اندر چلی گئی تھی۔

” طبعیت کیسی اب میری بٹیا کی۔۔۔۔ ٹھیک سے سوئیں تھیں ناں ؟؟؟؟؟ اب سر میں درد تو نا ہے ؟؟؟؟ ” مامتا عبادت کو ہرا کر، سینہ تان کر کھڑی ہوئی ” میں ٹھیک ہوں ” وہ کس زاویے سے ٹھیک تھی ؟ وہ ٹھیک ہوتی تو دن چڑھے اپنی چارپائی پہ گُھک ملتی۔ ماں سے دھمُک کھا کر بھی اپنے مقررہ وقت پہ اٹھتی اور کوشش کرتی کہ منہ دھونے کُلی کرنے سے بھی پہلے آدھی روٹی کھالے، گرما گرم۔ کس نے کہہ دیا تھا کہ وہ ٹھیک تھی۔ اس نے خود نے ؟ تو اس نے آج تک کچھ ٹھیک کب کہا تھا۔ آج اماں تندور تاپنے سے پہلے، پرات بھر آٹا گوندھنے سے بھی پہلے، اشراق کے بعد جاۓ نماز سمیٹ کر سیدھا چھپری رسوئی میں نہیں گئی تھیں۔

وہ اسکے پاس کمرے میں پہنچیں۔ وہ جہاں ڈولی کے پاس بیٹھی، ایک ایک کتاب جھاڑ کر فرش پہ رکھتی جا رہی تھی۔ انہیں عجوبہ ہوا ” اے یہ کیا صبح صبح ؟؟؟ ” ” کتابیں نکال رہی ہوں ” اسکا لہجہ کیسا سادہ تھا۔ سادہ سا سفید رنگ ہو جیسے۔ ایک رنگ پر اسکے بخیئے نوچ ڈالو تو پتہ چلے کہ اسکے کلیجے میں کیسے کیسے رنگ ہیں۔

” ابھی سے تیاری شروع کروں گی تو سپلی پاس ہو گی ناں اماں۔ آج سے ہی محنت کرنی ہو گی ” وہ اسے دیکھ کر رہ گئیں ” پر تیرے ابا اور بڑے میاں نے۔۔۔۔ ” ” اماں جاؤ ناشتے کا کچھ کرو۔ بھوک لگی ہے۔ روٹی کھا کر پڑھنے بیٹھوں گی۔ ” بنا سر اٹھاۓ، اپنے کام میں وہ مصروف تھی۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

Dive into the Depths of Emotion and Discovery with ‘Hum Asman Kay Log Hein’ By Zaid Zulfiqar Season 1: A Tale of Love, Identity, and the Life Journey Within.

Hum Asman Kay Log Hein By Zaid Zulfiqar Season 1 in Pdf

Hum Asman Kay Log Hein By Zaid Zulfiqar Season 1

ناول کا پی ڈی ایف ڈاؤن لوڈکرنے کے لیے ڈاؤن لوڈ کے بٹن پرکلک کریں

👇

or

ناول کوپڑھنے کے لیےیہا ں کلک کریں

👇

Novel Galaxy is a world of Urdu novels based on social issues, rude heroes novels, Urdu revenge base novels, Urdu E-book, Urdu digest, Urdu horror and thriller novels, etc. All novels are also available online and in PDF form.

Top Categories of Urdu Novels 

 Here, you will find a list of Urdu novels from all categories that can easily be downloaded in PDF format and saved into your devices/mobile with just one click.

There’s no content to show here yet.

You might also like these NOVELS

Leave a Comment