Hum seh chuky jaana by Amna Mehmood

Posted on

Amna Mehmood is a social media writer. She wrote novels on many social topics like Vani base, age difference, friendship base, and a romantic story. Hum seh chuky jaana by Amna Mehmood presents our society’s issues. Her writing style is so mesmerizing that one can dive into their words.

The platform of novelgalaxy brought a golden opportunity for all writers who want to get recognition worldwide by their writers. So if you’re going to get your work published contact us.

Hum seh chuky jaana by Amna Mehmood presents our society’s issues. Her writing style is so mesmerizing that one can dive into their words.

here we post Hum seh chuky jaana by Amna Mehmood. if you want to read then click here to download this novel 👇

Novel name: Hum seh chuky jaana by Amna Mehmood

Writer name: Amna Mehmood

Category: Romantic novel

Novel status: complete

sneakpic

انتہائی احتیاط سے دروازہ کھولتے ہوئے دراب نے ایک نظر بیڈ کی طرف دیکھا جہاں اس کی “بلیک کیٹ” لیٹی ہوئی تھی. کمرے میں ملگجی سی روشنی تھی اس لیے اسے اندازہ نہیں ہو رہا تھا کہ وہ ابھی تک جاگ رہی ہے یا نہیں …… ؟ میرے خیال سے سو گئی ہے ورنہ ابھی تک اٹھ کر چیخ رہی ہوتی ___ دراب نے خودکلامی کرتے ہوئے آہستہ سے پاؤں کی مدد سے دروازہ بند کیا مگر شومئی قسمت ہاتھ کی انگلی بیچ میں آ گئی. بہت ضبط کے باوجود بھی ایک دلخراش چیخ اس کے منہ سے نکلی. روشنی نے ایک بار سر اٹھا کر دروازے کی طرف دیکھا اور سر نفی میں ہلایا جبکہ دراب نے شرمندہ سی مسکراہٹ ساتھ اسے ہاتھ ہلاتے ہوئے اپنا بریف کیس اور کوٹ قریبی صوفے پر رکھا. اگر تم جاگ ہی گئی ہو تو مجھے کھانا ہی گرم کر دو ___ دراب اب صوفے پر بیٹھا موزے اتار رہا تھا. کیوں ___ وجہ __ کوئی خاص تکلیف …….. ؟؟؟ روشنی کے جواب پر ایک لمحے کے لیے دراب کے ہاتھ رکے مگر پھر وہ دوبارہ اپنے کام میں مگن ہو گیا. روز تو نہیں کہتا آج کہہ دیا تھا تو دل ہی رکھ لیتی __ داراب اب اپنی شرٹ کے بازو فولڈ کرتا روشنی کے سر پر موجود تھا. اس گھر میں جو سرکار نے تمہیں اتنے نوکر دیے ہیں ان کا یہی مقصد ہے کہ وہ تمہاری خدمت کریں. روشنی کے جواب پر دراب نے اس کی طرف افسوس سے دیکھا مطلب تمہاری طرف سے صاف ” نہ” ہے ______؟؟؟ دراب کا لہجہ تھکا ہوا تھا. لگتا ہے تمہاری حرکتوں کی وجہ سے تمہیں نوکری سے نکال دیا گیا ہے. اگر واقعی ہی ایسا ہے تو پھر بھی میں اتنی سردی میں تمہارے لیے کچن میں نہیں جا سکتی. کیوں کہ میں اچھی طرح جانتی ہوں کہ تمہیں کوکنگ آتی یے آخر اتنا عرصہ ہوٹل میں کام کیا ہے. اسی لیے مجھے کزن میرج سے چڑ تھی ___ روشنی کے جواب پر دراب کہتا ہوا واش روم کی طرف مڑ گیا. اور مجھے پورے کے پورے کزن سے ہی ___ روشنی کا سکون قابل دید تھا اگر مجھے اس معصوم کا خیال نہ ہوتا تو بتاتا تمہیں ____ دراب نے روشنی کے پاس لیٹے ہوئے اپنے چند ماہ کے بچے کی طرف دیکھ کر کہا بے فکر رہو یہ بھی تمہارا ہی بچہ ہے اتنی جلدی اٹھنے والا نہیں __ تم شاید بھول رہے ہو کہ تمہیں گاؤں میں صبح چچی کیسے اٹھاتی تھیں……….. ؟؟؟ روشنی نے قدرے تیز آواز میں جواب دیا. بلیک کیٹ مت بھولو میں تمہارا شوہر ہوں. دراب نے یاد دلایا. بھورے بلے ____ مجھے اس کے ساتھ ساتھ اور بھی بہت کچھ یاد ہے کہو تو دہرا دوں؟؟؟ روشنی کی چمکتی آنکھوں کو دیکھ کر دراب کے چہرے پر مسکراہٹ بکھر گئی. “فزکس والے تو یہ بات جانتے ہی نہیں گریوٹی سے زیادہ کشش ہے تیری آنکھوں میں” ڈھیٹ کزن ___ دراب کہتا ہوا واش روم میں پلٹ گیا

Hum seh chuky jaana by Amna Mehmood pdf is here

Hum seh chuky jaana by Amna Mehmood

Download here

Or

Download from google docs 

A list of Amna Mehmood’s other novels is here

تمام سوشل میڈیا رائیٹرز کو ” ناول گلیکسی” کی ٹیم خوش آمدید کہتی ہے  ۔

ہماری ٹیم کا حصہ بننے کے لیئے اپنا مواد اس ای میل پر بھیجیں۔

Novelgalaxy27@gmail.com

You might also like these NOVELS

Leave a Comment