Jab name pukary jayn gy by Bisma Ijaz

Posted on

Bisma Ijaz is a social media writer. She wrote novels on many social topics like Vani base, age difference, friendship base, and a romantic story.  Jab name Pukary jayn gy by Bisma Ijaz presents our society’s issues and an army base. Her writing style is so mesmerizing that one can dive into their words.

The platform of novelgalaxy brought a golden opportunity for all writers who want to get recognition worldwide by their writers. So if you’re going to get your work published contact us.

Jab name pukary jayn gy by Bisma Ijaz presents our society’s issues. Her writing style is so mesmerizing that one can dive into their words.

here we post Jab name pukary jayn gy by Bisma Ijaz. if you want to read then click here to download this novel 👇

Novel name: Jab name pukary jayn gy

Writer name: Bisma Ijaz

Category: Romantic novel

Novel status: complete

sneakpic

تم نکلنا چاہتی ہو یہاں سے؟ سارہ نے تمسخرانہ انداز میں منت سے سوال کیا۔ منت نے خشک لبوں پہ زبان پھیرتے ہوۓ ہاں میں سر ہلایا۔ وہ قدم قدم چلتی ہوٸی منت کے قریب آ کر پنجوں کے بل بیٹھی۔ چلو ایک کام کرتے ہیں ۔تم یہ میرا موباٸل لو اور منہاس کو کال کر لو ۔ٹھیک ہے۔ سارہ نے منت کی طرف اپنا فون بڑھایا۔منت نے بے تابی سے اس کا فون پکڑ کر منہاس کا نمبر ملایا۔۔اسکا نمبر بند جا رہا تھا۔۔ منت روہانسی ہو گٸ۔کپکپاتے ہاتھوں سے دوسرا نمبر ڈاٸل کیا۔وہ بھی بند تھا۔۔ چہ چہ چہ۔۔۔سارہ نے مصنوعی تاسف دکھاتے ہوۓ فون اسکے ہاتھوں سے لیا۔ نہیں اٹھاۓ گا فون۔۔صرف میرا ہی نہیں کسی کا بھی نہیں۔تمہارا بھی نہیں۔۔ منت ہو سکتا ہے کچھ دنوں تک میرا تم تم سے رابطہ نہ ہو پاۓ۔۔ منت کے کانوں میں منہاس کی آواز گونجی۔ ویسے کتنا دکھ ہوتا ہے نہ جب آپکی فکر کرنے والے کو معلوم ہی نہ ہو کہ آپ کس اذیت سے گزر رہے ہیں۔کتنا دل دکھتا ہے جب ہر پل خیال رکھنے والا انسان آپ سے اس وقت دور ہو جب اسکی سب سے زیادہ ضرورت محسوس ہو۔ پتا ہے ایسے وقت میں تکلیف بھی اپنی ہر حد سے گزر جاتی ہے۔ سارہ نے منت کے چہرے پہ آٸی لٹ کو اسکے کانوں کے پیچھے اڑستے ہوۓ زہریلے لہجے میں کہا۔منت نے اسکا ہاتھ جھٹک دیا۔ تمہارے شوہر کو خبر تک نہیں کہ تم اغوا ہو چکی ہو۔۔اور میں ہر ممکن کوشش کروں گی کہ وہ جس کام میں پھنسا ہے ایک طویل مدت تک اسی میں مشغول رہے۔ منت نے خوف سے انکار میں سر ہلایا۔ تم پچھتاٶ گی منت کہ تم نے کس سے دشمنی مول لی ہے۔۔سارہ کھڑے ہوتے ہوۓ چلاٸی۔ تم مرنے کی دعا کرو گی اور میں تمہیں مرنے نہیں دوں گی۔ یہ دشمنی نہیں ہے یہ جلن ہے حسد ہے۔منت نے اپنے حواسوں پہ قابو پاتے ہوۓ ہموار لہجے میں کہا۔سارہ چونک گٸ۔مسکراہٹ اسکے لبوں کو چھوتی ہوٸی معدوم ہو گٸ۔ تم نے ٹھیک کہا۔یہ دشمنی نہیں ہے۔۔حسد ہے۔اور حسد دشمنی سے بھی زیادہ خطرناک ہوتا ہے۔ جب نام پکارے جائیں گے

Jab name pukary jayn gy by Bisma Ijaz pdf is here

Jab name pukary jayn gy by Bisma Ijaz

Download here

Or

Download from google docs 

Part 2 of novels

Jab name pukary jayn gy 2 by Bisma Ijaz

تمام سوشل میڈیا رائیٹرز کو ” ناول گلیکسی” کی ٹیم خوش آمدید کہتی ہے  ۔

ہماری ٹیم کا حصہ بننے کے لیئے اپنا مواد اس ای میل پر بھیجیں۔

Novelgalaxy27@gmail.com

You might also like these NOVELS

Leave a Comment