Justujo Thi Khas Ke By Yusra

Posted on

Justujo Thi Khas Ke By Yusra complete Urdu novel based on social issues, age differences, cousin marriage, romantic, family system-based, kidnapping-based, funny, contract marriage, forced marriage, army-based books, etc.

” ہر بار تجھے چھوڑ دیا یہ سوچ کر کے تو کبھی میرا بھائی رہ چکا ہے لیکن نہیں تجھ جیسا کمینہ نا بھائی بنا ڈیزرو کرتا ہے نا شوہر۔۔۔ “ اسکی آواز بلند سے بلند ہوتی جا رہی تھی موحد کے ہونٹ اور ناک سے خون بہ رہا تھا لیکن یہاں پروا کسے تھی؟؟ وہ تو آج اس بھڑکتی آگ کو کم کرنے میں ناکام محسوس ہوا تھا جسے موحد نے بھڑکایا تھا۔۔۔

۔ موحد نیچے زمین پر نڈھال سا پڑا عاشی کو دیکھ رہا تھا وہی اب اسے روک سکتی ہے۔۔ نا آج وہ اسکی چیخیں سن رہا تھا نا اسکا بہتا لہو صارم کو اسے مزید مارنے سے روک رہا تھا پر یہاں تو یہ نظریں اس جلتی آگ کو مزید بڑھکا گئیں وہ تیر کی تیزی سے ایک ہاتھ سے اسکی شرٹ پکڑ کے اسے پھر اپنے سامنے لیے کھڑا دھارتے ہوے پوچھ رہا تھا۔۔۔

” ذلیل انسان پاک بیوی چاہیے تھی نا؟؟؟ پھر آج یہاں کس پاکیزگی کی تلاش میں آئے ہو؟؟؟؟ “ اپنا چہرہ اسکے چہرے کے سامنے کیے وہ پوچھ رہا تھا۔۔ سرخ آنکھیں خون ٹپکانے کو تھیں مزید ایک گندی نظر وہ اپنی بیوی پر برداشت نہیں کر سکتا۔۔۔ اسکی چھپی۔۔۔ اسکی خاموشی۔۔ صارم کا خون کھول اٹھا زور دار گهونسا اسکے منہ پر جڑ دیا جس سے موحد کا چہرہ پیچھے ہوکر واپس اب صارم کے چہرے کے قریب تھا کیوں کے اسکی شرٹ کو صارم نے سختی سے جکڑ رکھا تھا تاکے وہ نیچے نا گڑ سگے۔۔۔۔

” یہ کیا کر رہے ہو؟؟؟ “ جہانگیر صاحب دور سے ہی چلاتے ہوے باقاعدہ تیز قدم اٹھاتے صارم کی طرف آرہے تھے جس کے ہونٹ اب انہیں دیکھتے مسکرا اٹھے عاشی بھی ڈری سہمی نظروں سے انھیں ہی دیکھ رہی تھی کیوں کے انکے ساتھ روتا ہوا ارحم تھا جو ماں کو دیکھ کر جہانگیر صاحب کی گودھ سے اُتر کر دوڑتا ہوا اب اسکے پاس آرہا تھا۔۔۔

صارم نے ارحم کو اٹھایا نہیں اس وقت بس اسکی نظریں اس باپ پر تھیں جو دنیا کے لیے بیٹی سے منہ موڑ گئے۔۔۔ ” ہم جیسوں کی محفل میں یہ عزت دار شخص کیسے آگیا سسر جی؟؟؟؟ “ موحد کو اپنے سسر کے سامنے کھڑا کر کے وہ زہر خند مسکراہٹ ہونٹوں پر سجائے انکا ضبط آزما رہا تھا۔۔۔ارحم کے قریب آتے ہی عاشی نے سمان کو اتار کر ارحم کو اٹھایا جو شاید ماں کو نا پاکر رو رو کر آنکھیں سُجا چکا تھا۔۔۔ ” کیا کہنا چاہتے ہو؟؟؟

“ وہ دانت پستے بولے انکی سب سے بڑی غلطی اپنی بیٹی صارم کے ہاتھوں میں دینا ہے جو اسکے باپ کی دو ٹکے کی عزت نہیں کرتا۔۔۔۔ ” آپکا غیرت مند بیٹا مجھ سے ملنے اسلام آباد آیا تھا ایک ہوٹل میں۔۔ صرف یہ بتانے کے میری بیوی میری پیٹھ پیچھے۔۔۔“ صارم نے مٹھیاں بینچ لیں، عاشی کی نظریں نیچے کو جھک گئیں کوئی اتنا کیسے گڑ سکتا ہے؟؟؟ کس چیز کا بدلا لیا ہے اس شخص نے ؟؟؟اگر اسکے بیٹے سلمان اور سمان نے اسکی ٹانگوں کو پکڑا نا ہوتا وہ ضرور زمین بوس ہوجاتی۔ جبکے جہانگیر صاحب بےیقین نظروں سے موحد کو دیکھ رہے تھے جو شرمندگی سے نظریں جھکائے کھڑا تھا۔۔۔

Dive into the Depths of Emotion and Discovery with ‘Justujo Thi Khas Ke By Yusra: A Tale of Love, Identity, and the Life Journey Within.

Justujo Thi Khas Ke By Yusra in Pdf

Justujo Thi Khas Ke By Yusra

ناول کا پی ڈی ایف ڈاؤن لوڈکرنے کے لیے ڈاؤن لوڈ کے بٹن پرکلک کریں

👇

or

ناول کوپڑھنے کے لیےیہا ں کلک کریں

👇

Novel Galaxy is a world of Urdu novels based on social issues, rude heroes novels, Urdu revenge base novels, Urdu E-book, Urdu digest, Urdu horror and thriller novels, etc. All novels are also available online and in PDF form.

Top Categories of Urdu Novels 

 Here, you will find a list of Urdu novels from all categories that can easily be downloaded in PDF format and saved into your devices/mobile with just one click.

There’s no content to show here yet.

You might also like these NOVELS

Leave a Comment