Meri eidi Tum ho by Amna Mehmood

Posted on

Amna Mehmood is a social media writer. She wrote novels on many social topics like Vani base, age difference, friendship base, and a romantic story. Meri eidi Tum ho by Amna Mehmood presents our society’s issues. Her writing style is so mesmerizing that one can dive into their words.

The platform of novelgalaxy brought a golden opportunity for all writers who want to get recognition worldwide by their writers. So if you’re going to get your work published contact us.

Meri eidi Tum ho by Amna Mehmood presents our society’s issues. Her writing style is so mesmerizing that one can dive into their words.

here we post Meri eidi Tum ho by Amna Mehmood. if you want to read then click here to download this novel 👇

Novel name: Meri eidi Tum ho by Amna Mehmood

Writer name: Amna Mehmood

Category: Romantic novel

Novel status: complete

sneak pic

آج صبح سے ہی ابراہیم کی طبیعت کافی خراب تھی. اُس کا دل بہت گھبرا رہا تھا. اُسے اپنے باپ، اپنے آبائی گاؤں، اپنے بھائی کی یاد ستا رہی تھی. لگتا ہے میرا آخری وقت آن پہنچا ہے اور میں مرنے سے پہلے اپنوں کو نہیں دیکھ پاؤں گا. میں یہیں دیارِغیر میں مروں گا غیروں کے درمیان…… ابراہیم کی آنکھوں سے آنسو نکل پڑے جو اُس کے تکیے میں جذب ہوئے. کتنے دن ہو گئے ولی بھی گھر نہیں آیا. اُس کو بھی نہیں دیکھا اتنی ہمت ہی نہیں جسم میں کہ اُس کو کال کروں. کچھ لوگوں کا ہونا نہ ہونا ایک برابر ہوتا ہے اور ڈیانا کا بھی میرے لئے ہونا نہ ہونا ایک برابر ہے. مجھے میرے کیے کی سزا اس دنیا میں مل گئی ہے اللہ کرے آخرت میں معافی مل جائے. کاش میں ایک دفعہ پاکستان جاسکتا اور سارہ سے معافی مانگ سکتا. حالانکہ میں نے سارہ کو کوئی دھوکا نہیں دیا تھا. میں نے اسے بتا دیا تھا کہ میں باہر رہنا چاہتا ہوں اپنے خواب کی تکمیل کرنا گناہ نہیں ہے. لیکن پھر بھی شاید جانے انجانے میں مجھ سے غلطی ہوگئی اور میں نے اپنی بہت اچھی دوست کو کھو دیا. ابراہیم نے اپنے آپ کو تسلی دینے کے لئے سوچا مگر پھر دوبارہ افسردہ ہوگیا. اگر آج میں پاکستان میں ہوتا اور ڈیانا کی جگہ سارہ ہوتی تو یقیناً میرے یہ دن بہت خوشگوار گزرتے. میرے ساتھ میرے پیارے ہوتے، ان کی ہمدردی ہوتی، اپنی مٹی کی خوشبو ہوتی اور سب سے بڑھ کر سارہ کا پیار اور ساتھ ہوتا اور ولی بھی ایسا نہ ہوتا جیسا آج ہے. ولی کی سوچ آتے ہی ابراہیم کا دھیان پھر ولی کی طرف گیا. اس نے بڑی ہمت کر کے سائیڈ ٹیبل پر پڑا اپنا موبائل اٹھانا چاہا مگر موبائل ہاتھ آنے کی بجائے زمین پر گر گیا. یا اللہ میرے آخری وقت سے پہلے ولی کو یہاں پہنچا دے میں نے کچھ بہت ضروری باتیں کرنی ہے اس سے…. ابراہیم نے اپنے دل میں سوچتے ہوئے اللہ سے دعا کی اور بے بسی سے زمین پر گرے ہوئے موبائل اور پھر اپنے کمرے کے بند دروازے کی طرف دیکھا

Meri eidi Tum ho by Amna Mehmood pdf is here

Meri eidi Tum ho by Amna Mehmood

Download here

Or

Download from google docs 

A list of Amna Mehmood’s other novels is here

تمام سوشل میڈیا رائیٹرز کو ” ناول گلیکسی” کی ٹیم خوش آمدید کہتی ہے  ۔

ہماری ٹیم کا حصہ بننے کے لیئے اپنا مواد اس ای میل پر بھیجیں۔

Novelgalaxy27@gmail.com

You might also like these NOVELS

Leave a Comment