Zt E Ishq By Rabia Bukhari

Posted on

Zt E Ishq By Rabia Bukhari complete Urdu novel based on social issues, age differences, cousin marriage, romantic, family system-based, kidnapping-based, funny, contract marriage, forced marriage, army-based books, etc.

دن بھر کی تھکاوٹ اور بھاگ دوڑ کے بعد اپنے نرم گرم بستر میں لیٹا زریس کسی معصوم بچے سے کم نہ لگ رہا تھا۔۔۔۔ تکیے کو دونوں ٹانگوں میں دبائے وہ لحاف لپیٹے خواب خرگوش کے خوب مزے لے رہا تھا۔۔۔۔۔ کہ اچانک پاس پڑے موبائل نے زور زور سے ڈھول بجانا شروع کردیا۔۔۔ عصار پہلے پہر اسے اپنے خواب کا ہی حصہ سمجھتا رہا لیکن. جب آواز بلند اور مسلسل ہوتی گئی تو بآلاخر اپنی نیند کو توڑتے ہوئے آنکھیں موندھے موبائل کی جانب ہاتھ بڑھا کر اسے پکڑ لیا۔۔۔۔۔

آنکھوں کو مسلتے ہوئے جب نظر موبائل کی سکرین پر پڑی تو وہ بینکاک کا انجان نمبر تھا۔۔۔۔۔ کچھ دیر نمبر کو یونہی دیکھتا رہا اور پہنچانے کی کوشش کرتا رہا لیکن جب کچھ سمجھ نہ آیا تو تھک ہار کر فون اٹھا ہی لیا۔۔۔۔۔ نیند چونکہ آنکھوں میں بھری ہوئی تھی آواز بھی نیند کی وجہ سے آہستہ اور کمزور تھی۔۔۔۔ دھیرے سے ہیلو کہتے ہوئے عصار نے دوسری جانب موجود شخص کو مخاطب کیا۔۔۔۔۔ میری نیندیں اڑا کر تم کیسے سکون میں سو سکتے ہو عصار چودھری۔۔۔۔۔۔

لائن سنتے ساتھ ہی عصار کی آنکھیں پھٹی کی پھٹی رہ گئی اور وہ آنکھیں جو نیند سے کچھ دیر پہلے بھری ہوئی تھی . وہ نیند آنکھوں سے کوسوں دور بھاگ گئی تھی۔۔۔ تیزی سے ہڑبڑاہٹ میں اٹھتے ہوئے وہ پریشانی سے کھڑا ہوگیا۔۔۔۔ کون بات کررہا ہے ؟؟؟؟ اپنے آواز میں دلچسپی اور سنجیدگی ظاہر کرتے بولا۔۔۔۔۔ جبکہ جواب اس کی سوچ کے برعکس تھا جس نے اسے مزید بے چین کر کے رکھ دیا۔۔۔۔۔

میں زریس شاہ بات کررہا ہو جس کی محبت کو وآپس کرنے کا دعوی تم کچھ دن پہلے کر رہے تھے۔۔۔ سوچا تم سے تمہارے وعدے کے مکمل ہونے اور اس کی راہ منزل کا پوچھ لوں۔۔۔۔۔ ہاتھ میں سگریٹ تھامے وہ ناک سے دھووں کے بادل اڑاتے ہوئے بولا جبکہ اس کے لبوں سے بھی بولتے ہوئے دھواں کے چھوٹے چھوٹے بھبھوکے باہر نکل رہے تھے۔۔۔۔۔ زریس کا نام سنتے ہی عصار نے ایک گہری سانس لی اور وآپس بیڈ پر بیٹھتے ہوئے موبائل کودوسرے کان سے لگاتے ہوئے خود بھی سگار جلانے کی کوشش کرنے لگ گیا۔۔۔۔۔

میں جٹ چودھری ہو زریس شاہ وعدے نبھانا اور اس کیلئے اپنی جان تک قربان کر دینا ہمارے خون میں ہی شامل ہوتا ہے۔۔۔ بے فکر ہو کر سو جاؤ اور میری نیند کو بھی حرام نہ کرو مجھ پر۔۔۔۔۔۔۔ عصار کے تیور بھی اب زریس کے لہجے کی سرد مہری کو دیکھتے ہوئے بدل گئے تھے۔۔۔۔۔۔ اگر تم میری جگہ ہوتے تو کیا خود پر فکری کو ڈھلنے نہ دیتے کیا؟؟؟ اور کیا آرام سے سو سکتے تھے اپنی محبت کو کسی کے ساتھ دیکھ کر۔۔۔۔۔۔۔

زریس نے سگریٹ کو دور پھینکتے ہوئے سختی سے لفظوں کو وزن دیتے ہوئے کہا۔۔۔۔۔۔ اپنی حد میں رہوں مسٹر زریس شاہ اگر محبت کا اتنا ہی پاس تھا تو کبھی ایسی لڑکی سے محبت نہ کرتے۔ جس کو تمہاری ذرا برابر بھی فکر نہیں۔۔۔۔ جو تمہارا نام لینا بھی توہین اور حرام سمجھتی خود پر ہیں۔۔۔۔۔ تمہاری محبت میں پاکیزگی اور طاقت ہوتی تو تمہیں آج مجھے کال کرنے کی ضرورت نہ پڑتی ۔۔۔۔۔۔۔ عصار نے بھی اینٹ کا جواب پتھر سے دیتے ہوئے کہا۔۔۔۔۔۔

بہت ہوگیا عصار مجھ سے تمیز سے بات کروں وہ جو مرضی کرے یا مسجھے تمہیں اس سے کوئی لنک نہیں ہونا چاہیے اگر تم سے ہوسکتا ہے کہ تم اسے میرے تک وآپس لا سکتے ہو تو بات کرو ورنہ میرے پاس اور بھی بہت سے طریقے ہیں اسے اپنا بنانے کے۔۔۔۔۔۔. زریس کے الفاظ ابھی بھی سختی ظاہر کررہے تھے۔۔۔۔۔۔

مجھے بس کچھ دن کا اور وقت دو جلد عفہ کو تمہارے سامنے کھڑا کر دونگا اور پھر تمہاری محبت تمہارے سامنے کھڑی اپنی وفا کی دواہیاں دے رہی ہوگی۔۔۔۔۔۔۔ عصار نے دوٹوک بات کرتے ساتھ ہی کال کاٹ دی۔۔۔۔ موبائل فون بیڈ پر پھینکتے ساتھ ہی بیڈ پر پیچھے کی جانب گرتے ہوئے لیٹ گیا اور نظریں چھت کی جانب ٹکا لی۔۔۔۔۔ ہاتھ کو اٹھاتے ہوئے چھت کی جانب اشارہ کرتے ہوئے عفہ کا نام ہوا میں محلول کرنے لگ گیا۔۔۔۔۔ بہت بری پھنسی ہو عفہ تم دو مردوں کے درمیان۔۔۔۔ اور جب عوت دو مردوں کے درمیان آجاتی ہیں تو اس میں صرف عورت کا ہی نقصان ہوتا ہے کیوں کہ اس کے بعد وہ محبت پر یقین کرنا اور دوسروں پر اعتبار کرنا چھوڑ دیتی ہیں۔۔۔۔۔

ایک وہ ہے جو تمہیں پانا چاہتا ہے اور ایک میں ہوں جو تمہیں پا کر کھونا چاہتا ہو شاید تبھی تم سبق سیکھ جاؤ۔۔۔۔۔ دیکھتے ہیں تمہاری قسمت اور تم کتنی خوش نصیب اور مضبوط ہو ۔۔۔۔۔۔ کہ دو مردوں کا مقابلہ کر سکوں ۔۔۔۔۔۔۔۔ بہت بڑی گیم ہے لڑکی جس میں ہر کوئی تمہیں جیتنا چاہتا ہے۔۔۔۔۔۔ کہتے ساتھ ہی سکون سے آنکھیں موندھ کر آگے کی پلینگ کے بارے میں سوچنے لگ گیا۔۔۔۔۔۔

Dive into the Depths of Emotion and Discovery with ‘Zt E Ishq’ By Rabia Bukhari: A Tale of Love, Identity, and the Life Journey Within.

Zt E Ishq By Rabia Bukhari in Pdf

Zt E Ishq By Rabia Bukhari

ناول کا پی ڈی ایف ڈاؤن لوڈکرنے کے لیے ڈاؤن لوڈ کے بٹن پرکلک کریں

👇

or

ناول کوپڑھنے کے لیےیہا ں کلک کریں

👇

Novel Galaxy is a world of Urdu novels based on social issues, rude heroes novels, Urdu revenge base novels, Urdu E-book, Urdu digest, Urdu horror and thriller novels, etc. All novels are also available online and in PDF form.

You might also like these NOVELS

Leave a Comment